نیازی صاحب کی وجہ سے اورنج لائن منصوبہ 22 ماہ تاخیر کا شکار ہوا، شہباز شریف

لاہور: وزیراعلیٰ پنجاب شہبازشریف نے کہا ہے کہ اورنج لائن ٹرین کا آزمائشی سروس سنگ میل ہے، نیازی صاحب کے حربوں کی وجہ سے اوینج لائن منصوبہ 22 ماہ تاخیر کا شکار ہوا۔

تفصیلات کے مطابق خادم اعلیٰ پنجاب شہباز شریف نے کہا ہے کہ ہم نے عالمی معیار کے ماس ٹرانزٹ سسٹم کو عملی جامہ پہنایا گیا ہے۔ یہ ٹرین 27 کلومیٹر کا فاصلہ صرف 45 منٹ میں طے کرے گی۔

وزیر اعلیٰ پنجاب شہباز شریف کا کہنا ہے کہ اورنج لائن ٹرین کی کامیاب آزمائشی سروس سنگ میل ہے، ہم نے عالمی معیار کے ماس ٹرانزٹ سسٹم کو عملی جامہ پہنایا گیا ہے۔

شہباز شریف کا کہنا تھا کہ یہ ٹرین 27 کلومیٹر کا فاصلہ صرف 45 منٹ میں طے کرے گی۔

خادم اعلیٰ پنجاب نے عمران خان پر تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ ’نیازی صاحب روڑے نہ اٹکاتے تو منصوبہ مکمل آب و تاب سے جاری ہوتا، نیازی صاحب کے حربوں کی وجہ سے اوینج لائن منصوبہ 22 ماہ تاخیر کا شکار ہوا۔

وزیر اعلیٰ پنجاب کا مزید کہنا تھا کہ نیازی صاحب اور زرداری صاحب کو ایسے منصوبے شروع کرنے کی توفیق نہ ہوئی۔

ٹرین کے کُل اسٹیشنز کی تعداد 24 ہے جن میں سے 2 زیرزمین ہیں ،منصوبے کے تحت پہلے مرحلے میں چین سے 27 ٹرینیں منگوائی گئیں، یہ ٹرین ایک سرے سے دوسرے سرے تک کا سفر 45 منٹ میں طے کرے گی۔

یاد رہے کہ گذشتہ روز اورنج ٹرین منصوبے کی آزمائشی سروس کا آغاز کیا تھا، یہ ٹرین 27.12 کلومیٹر طویل ٹریک پر سفر کرے گی، جو 254 کلومیٹر بالائے زمین جبکہ 1.72 کلومیٹر زیر زمین ہوگا۔

خیال رہے کہ اورنج ٹرین منصوبے پر تعمیراتی کام 4 پیکجز میں مکمل کیا جارہا ہے جن میں سے پیکج ون اور ٹو کے تحت ٹریک کی تعمیر جبکہ تھری اور فور میں بلترتیب ڈپو اور سٹبلنگ یارڈز بنائے جائیں گے۔

یاد رہے کہ میٹرواورنج ٹرین سروس سے یومیہ ڈھائی لاکھ افراد استفادہ حاصل کریں گے، 2015 میں شروع ہونے والے منصوبے کا مجموعی طور پر 88 فیصد تعمیراتی کام مکمل ہوچکا۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

This post is shared by PakPattani.com For Information Purpose Only

اپنا تبصرہ بھیجیں