کیریئر تباہ کرنے پر ایشلے جوڈ کا وائن سٹائن پر ہرجانے کا دعویٰ

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption ایشلی جوڈ کا کہنا ہے کہ وائن سٹائن نے ان کے کریئر کو سبوتاژ کیا

اداکارہ ایشلے جوڈ نے آسکر انعام یافتہ ہاروی وائن سٹائن بدنام کرنے اور جنسی ہراس کا مقدمہ دائر کیا ہے۔

اداکارہ کا کہنا ہے کہ وائن سٹائن نے ان کی جنسی خواہشات کی تکمیل نہ ہونے کے بعد ان کے کیریئر کو نقصان پہنچایا۔

اس مقدمے میں وائن سٹائن پر بدنام کرنے، جنسی ہراس اور کیلیفورنیا ان فیئر کمپیٹیشن لا کی خلاف ورزی کے الزامات عائد کیے گئے ہیں۔

اسی بارے میں

جنسی ہراس کے خلاف ہالی وڈ کی ’ٹائم اپ‘ مہم

وائن سٹین کی آسکر کی رکنیت ختم

ایشلے جوڈ ان خواتین کے پہلے گروہ میں سے تھیں جو فلم ساز کے خلاف جنسی ہراس کے الزامات کے ساتھ سامنے آئیں۔

وائن سٹائن پر ریپ، جسمانی قربت اور ہراساں کیے جانے کے متعدد الزامات ہیں۔

لاس اینجلس کی عدالت میں دائر مقدمے میں کہا گیا ہے کہ وائن سٹائن نے انڈسٹری میں اپنی طاقت کا استعمال کرتے ہوئے ایشلے جوڈ کی ساکھ کو نقصان پہنچایا اور ان کے کام تلاش کرنے کی اہلیت کو محدود کیا۔‘

یہ بات اس وقت سامنے آئی جب گذشتہ سال لارڈ آف دی رنگز کے ڈائریکٹر پیٹر جیکسن نے کہا کہ وہ اپنی فلم میں ایشلے جوڈ کو لینا چاہتے تھے لیکن وائن سٹائن کی کمپنی سے بات کرنے کے بعد علم ہوا کے انھیں بلیک لسٹ کیا گیا تھا۔

انھوں نے کہا وائن سٹائن نے انہیں بتایا تھا کہ اس اداکارہ کے ساتھ کام کرنا ایک برے خواب جیسا ہے۔

تاہم وائن سٹائن کا کہنا تھا کہ پیٹر جیکسن کی کاسٹنگ کے ساتھ ان کا کوئی تعلق نہیں تھا اور ایشلے جوڈ کا کریئر تباہ کرنے میں ان کا کوئی ہاتھ نہیں۔

جنوری میں بی بی سی کے پروگرام ہارڈ ٹاک میں بات کرتے ہوئے ایشلے جوڈ نے کہا تھا کہ انھیں لگتا ہے کہ وائن سٹائن نے انہیں نشانہ بنایا کیونکہ وہ ان سے خوفزدہ نہیں تھیں۔

’اسی لیے انھوں نے مجھے بلیک لسٹ کیا اور بدقسمتی سے انتہائی کامیابی سے میرا کریئر سبوتاژ کیا۔‘

ایشلے کا کہنا ہے کہ اگر یہ مقدمہ جیت جاتی ہیں تو وہ ہرجانے کی رقم ’ٹائمز اپ لیگل ڈیفینس فنڈ‘ میں جمع کروائیں گی۔

’ٹائمز اپ‘ نامی مہم جنسی ہراس کے خلاف ہے جو جنوری میں میڈیا، فلم اور براڈ کاسٹگ میں ہونے والے جنسی ہراس کے واقعات کے خلاف شروع ہوئی۔

اس مہم سے بنایا گیا فنڈ ایسے لوگوں کی مدد کرتا ہے جنھیں کام کی جگہ پر جنسی ہراس، استحصال یا توہین کا نشانہ بنایا گیا ہو۔

This post is shared by PakPattani.com For Information Purpose Only

اپنا تبصرہ بھیجیں