فلپائنی صدر کے کویت سے تارکین وطن ورکرز کی واپسی کے اعلان پر ہمیں تشویش ہے: ورکر گروپ

منیلا: فلپائن کے ورکر گروپ نے فلپائنی صدر روڈیگو دوٹیرٹے کے کویت سے تارکین وطن ورکرز کی واپسی کے اعلان پر شدید تشویش کا اظہار کر دیا۔

تفصیلات کے مطابق فلپائن اور کویت کے سفارتی تعلقات میں کشیدگی کے باعث گذشتہ روز فلپائنی صدر نے یہ اعلان کیا تھا کہ وہ کویت میں موجود فلپائنی شہریوں اور ورکرز کی وطن واپسی کے لیے اقدامات کریں گے کیوں کہ اب کویت میں موجود فلپائنی ناپسندیدہ قرار دیے جاچکے ہیں۔

فلپائن کے ورکر گروپ کی خاتون سربراہ ’ریسا ہونٹی‘ نے صدر روڈیگو دوٹیرٹے کے کویت سے ورکروں کو واپس بلانے کے فیصلے پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے اسے غیر ذمے دارانہ اور تنگ نظری پر مبنی قرار دیا ہے۔

ہم اپنے شہری کویت نہیں بھیجیں گے ‘ فلپائنی صدر

انہوں نے کہا کہ فلپائنی صدر کو ہزاروں فلپائنی تارکینِ وطن کی زندگیاں اور روزگار داؤ پر لگانے سے باز آجانا چاہیے، انہوں نے کویت میں تارکین وطن ورکروں کو ملک واپسی پر روزگار کی کوئی ضمانت نہیں دی ہے حالانکہ وہ اپنے اپنے خاندانوں کے کفیل اور ان کی کمائی کا واحد سہارا ہیں ۔

خیال رہے کہ فلپائنی حکومت کے فراہم کردہ اعداد وشمار کے مطابق کویت میں اس وقت دو لاکھ 65 ہزار سے زیادہ فلپائنی تارکینِ وطن کام کررہے ہیں۔

کویت: حکومت کی جانب سے جارحانہ بیانات پر فلپائنی سفیر دفتر خارجہ طلب

واضح رہے کہ جاری کردہ حکومتی اعداد وشمار میں سے 65 فی صد گھریلو ملازمین کے طور پر کام کرتے ہیں جبکہ ان تارکین وطن کی کمائی فلپائن میں کم آمدنی والے خاندانوں کے لیے بڑی اہمیت کا حامل ہے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

This post is shared by PakPattani.com For Information Purpose Only

اپنا تبصرہ بھیجیں