دنیا کا بدبودار سیارہ کون سا؟

فلوریڈا میں قائم خلائی تحقیقاتی مرکز ناسا کی جانب سے جاری رپورٹ کے مطابق یورینس نظام شمسی کا سب سے بدبودار سیارہ ہے، جس کی وجہ سیارے کے بادلوں میں موجود ہائیڈروجن سلفائیڈ ہے جس کی بو بہت تیز وتی ہے۔

خبر رساں ایجنسی اے ایف پی کے مطابق میتھین گیس کی موجودگی سے یہ سیارہ نیلگوں مائل دکھائی دیتا ہے۔

ناسا کے مطابق وائیجر دوم خلائی جہاز جب یورینس کے قریب سے گزرا تو اس نے وہاں ہائیڈروجن اور ہیلیئم کی موجودگی کا انکشاف کیا۔ جس کے بعد یہ خلائی جہاز یورینس سے دور ہوتا گیا اور اس سیارے پر خاص تحقیق نہ ہوسکی۔ اب معلوم ہوا ہے کہ یورینس پر پانی، امونیا اور ہائیڈروجن سلفائیڈ بھی پائی جاتی ہے۔

ماہرین فلکیات کے مطابق طاقت ور دوربین سے دیکھنے کے بعد پتا چلا ہے کہ یورینس کے بادلوں میں دکھائی دی جانے والی گیس کی باریک پرت ہائیڈروجن سلفائیڈ پر مشتمل ہے۔ امونیا اور ہائیڈروجن سلفائیڈ کی موجودگی سے یہ دونوں تیز بدبودار گیسز بنتی ہیں۔

یورینس کا اوسط درجہ حرارت منفی 200 درجے سینٹی گریڈ ہے۔ہائیڈروجن سلفائیڈ وہ گیس ہے جو تیل کے کنووں سے بھی خارج ہوتی ہے۔

This post is shared by PakPattani.com For Information Purpose Only

اپنا تبصرہ بھیجیں