سندھ اسمبلی کے باہر پولیس کا وکلاء اور اساتذہ پر دھاوا

کراچی: سندھ اسمبلی کے باہر 100 کے قریب لاء آفیسرز،پروسیکیوٹرز اور اساتذہ کو گرفتار کر لیا گیا، دھرنا پچھلے کئی روز سے جاری تھا۔

سندھ اسمبلی کا اجلاس شروع ہونے سے پہلے ہی سندھ پولیس نے وکلاء اور اساتذہ پر دھاوا بول دیا اور100 کے قریب اساتذہ اور وکلاء کو گرفتار کیا گیا ہے۔

اساتذہ گزشتہ پانچ سالوں سے تنخواہوں سے محروم ہیں جبکہ وکلاء کلرک ،لاء ڈپارٹمنٹ کے تمام لوگ میڈیکل سہولیات کی عدم دستیابی اور تنخواہیں دیگر صوبوں کے برابر کرنے کے حوالے سے احتجاج کر رہے تھے۔

واضع رہے کہ وکلاء کلرک ،لاء ڈپارٹمنٹ کے مطابق آج ان کے مطالبات کی منظوری کی یقین دھانی کروائی گئی تھی۔

This post is shared by PakPattani.com For Information Purpose Only

اپنا تبصرہ بھیجیں