آج سب لٹیرے اکٹھے ہو کر اداروں پر حملے کررہے ہیں: عمران خان

مردان: پی ٹی آئی چیئرمین عمران خان نے کہا ہے کہ اسلام آباد میں 126 دن کا دھرنا جمہوری تاریخ میں لکھا جائے گا، ہم نے 126 دن کے دھرنے میں عوام کا شعور اجاگر کیا.

ان خیالات کا اظہار انھوں نے مردان میں‌ جلسے عام سے خطاب کرتے ہوئے کیا. ان کا کہنا تھا کہ مولانا فضل الرحمان کے ہوتے ہوئے یہودیوں کو سازش کی کیا ضرورت ہے، جو اقتدار میں‌ آتا ہے، مولانا فضل الرحمان اس کے ساتھ فٹ ہوجاتا ہے.

ضمیر بیچنے والوں کو پارٹی سے نکالیں گے، ان کی پارٹی میں کوئی جگہ نہیں

عمران خان

عمران خان نے کہا کہ جے آئی ٹی نے ملک سے پیسہ باہر لے جانے والوں کی نشان دہی کی، واجد ضیا گھبرانا نہیں، قوم آپ کے ساتھ کھڑی ہے، قوم سپریم کورٹ کے ساتھ ہے. حیرت ہے، اسفندیار ولی ،آصف زرداری اور اچکزئی جمہوریت بچانے میں لگے ہیں، مجھے کیوں نکالا کہنے والا بھی جمہوریت بچا رہا ہے، میاں صاحب 300 ارب روپے چوری کرکے باہر لے گئے، اس لئے اآپ کو نکالا، پہلی بار طاقتور وزیراعظم کو عدلیہ نےانصاف کے کٹہرے میں کھڑا ہوا.

ان کا کہنا تھا کہ ملک کے سب لٹیرے اکٹھے ہوکر اداروں پر حملے کر رہے ہیں، بڑا گاڈ فادر، چھوٹا ڈان، زرداری پیسے لوٹ کرباہر لے جاتے رہے، سپریم کورٹ کے جج کے گھر کے باہر گولیاں چلائی گئیں، 29 اپریل کو ملک کےعوام کو مینار پاکستان آنے کی دعوت دیتا ہوں.

انھوں نے کہا کہ سب سے زیادہ پروٹول وزیر اعلیٰ پنجاب کا ہوتا ہے، پرویز خٹک کا پروٹوکول سب سے کم ہے، انھوں‌ امریکا میں ہمارے وزیراعظم کے کپڑے اتارے، یہ اس وزیراعظم کی نہیں، بلکہ پاکستان کےعوام کی بےعزتی ہے.

عمران خان نے کہا کہ ضمیر بیچنے والوں کو پارٹی سے نکالیں گے، ان کی پارٹی میں کوئی جگہ نہیں، قائداعظم نے جس کے لئے جدوجہد کی مجھے وہ پاکستان نظر آرہا ہے، ملک میں ایک تنظیم فوج کے خلاف بات کررہی ہے، پہلے دن سے کہہ رہا ہوں، امریکا کی جنگ میں شرکت نہیں کرنی چاہیے تھی، قصور اس کا ہے جس نے فوج کو قبائلی علاقوں میں بھیجا، خیبرپختونخوا اور فاٹا کو ضم کیاجائے، فاٹا کے پی سے ضم ہوا، تو وہاں ترقیاتی کام کریں گے.

اس موقع پر انھوں‌ نے مردان کی جانب سے شان دار استقبال کرنے پر عوام کا شکریہ ادا کیا اور پی ٹی آئی میں شامل ہونے پر خوش آمدید کہا.



خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں‘ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں.

Print Friendly, PDF & Email

This post is shared by PakPattani.com For Information Purpose Only

اپنا تبصرہ بھیجیں