بدھا کی جائے پیدائش پر عقیدت مندوں کی باقیات دفن

لمبینی، نیپال

نیپال میں حکام نے چند غیر ملکی عقیدت مندوں کی جانب سے بودھ مذہب کے بانی گوتم بدھ کی جائے پیدائش کے مقام پر اپنے پیاروں کی باقیات کو دفن کرنے کی اطلاعات سامنے آنے کے بعد تحقیقات شروع کر دیں ہیں۔

حکام کو کچھ دن قبل بدھ کی جائے پیدائش کے مقام پر انسانی دانتوں، سر کے بالوں اور ناخنوں کے علاوہ دیگر اشیا بھی ملی تھیں جن کے بارے میں انھیں یقین ہے کہ وہ تائیوان سے آنے والے عقیدت مندوں نے دفن کی ہوں گی جنھوں نے دو ہفتے قبل نیپال کے جنوب مغربی شہر لمبینی کا دورہ کیا تھا۔

یہ بھی پڑھیں

گوتم بدھ کی جائے پیدائش فضائی آلودگی سے متاثر

واضح رہے کہ بودھ مذہب کے بانی گوتم بدھ نیپال کے جنوب مغربی شہر لمبینی میں پیدا ہوئے تھے۔

حکام کو یہ اشیا مایا دیوی نامی مندر کے قریب ملی تھیں جو یونیسکو کے عالمی ثقافتی ورثے کی اہم یادگار ہے۔

اس واقعے نے متعدد افراد کو حیران کر دیا کیونکہ اس سائٹ کی سکیورٹی بہت سخت ہوتی ہے۔

لمبینی ڈویلپمنٹ ٹرسٹ کے خزانچی سریندر منی شکایہ نے بی بی سی نیپالی کو بتایا کہ اس سائٹ پر تعینات سیکورٹی اہلکاروں اور حکام کو بھی تحقیقات میں شامل کر لیا گیا ہے۔

شکایہ نے مزید کہا ’ہم ان واقعہ میں مجرم پائے جانے والے لوگوں کے خلاف کارروائی کریں گے۔‘

واضح رہے کہ اس سائٹ پر عام طور پر 300 سکیورٹی اہلکاروں کو تعینات کیا جاتا ہے۔

یونیسکو اور لمبینی ڈویلپمنٹ ٹرسٹ کی اجازت کے بغیر یہاں کسی بھی قسم کی کھدائی کی اجازت نہیں ہے۔

لمبینی کی 20 سال سے زیادہ عرصہ پہلے یونیسکو کے عالمی ثقافتی ورثے کی سائٹ کے طور درجہ بندی کی گئی تھی۔

This post is shared by PakPattani.com For Information Purpose Only

اپنا تبصرہ بھیجیں